Doctors Protest Rally in Quetta, Firing & 72 arrested

Category: Health 14 0

Quetta (June 14, 2011) – In Quetta doctors has took out rally. Police fired and batten charge on protestors young doctors and arrested some 72 doctors.

کوئٹہ: احتجاجی جلوس، 72 ڈاکٹر گرفتار

(Published in BBC Urdu website on June 14, 2011)

بلوچستان کے دالحکومت کوئٹہ میں ڈاکٹروں کے جلوس پر پولیس کی جانب سے فائرنگ اور آنسوگیس کے استعمال سے آٹھ ڈاکٹرزخمی ہوگئے جبکہ وزیراعلی ہاوس جانے کی کوشش میں پولیس نے بہتّر سے زیادہ ڈاکٹروں کو گرفتارکرلیا۔

واقعہ کے بعد ڈاکٹروں نے صوبہ بھر کے سرکاری ہپستالوں میں ایمرجنسی سروسز کو بند کردیا ہے۔

کوئٹہ سے بی بی سی کے نامہ نگار ایوب ترین کے مطابق ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن گزشتہ دو ماہ سے اپنے مطالبات کے حق میں سراپا احتجاج ہے جبکہ اس کے اراکین کی جانب سے تمام سرکاری ہسپتالوں میں کام کا بائیکاٹ ہے۔ صرف ایمرجنسی اور آپریشن تھیٹر کو مریضوں کے لیے کھلا رکھا گیا تھا۔

منگل کو سول ہپستال کوئٹہ سے ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن نے ایک احتجاجی ریلی نکالی۔ ریلی کے شرکاء جب وزیراعلیٰ ہاؤس کی طرف جانے لگے تو پولیس نے رکاوٹیں کھڑی کر کے انہیں روکنے کی کوشش کی۔ لیکن ڈاکٹروں نے جب رکاوٹیں عبور کرنے کی کوشش کی تو پولیس نے آنسوگیس کا استعمال کیا جس کے نتیجے میں آٹھ ڈاکٹر زخمی ہوگئے۔

ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایش کے صدر صمد پانیزئی نے کہا کہ منگل سے تمام سرکاری ہسپتالوں میں ایمرجنسی سروسز کو بند کردیا گیا ہے اور احتجاج کا سلسلہ اس وقت تک جاری رہے گا جب تک صوبائی حکومت کی جانب سے ینگ ڈاکٹروں کی تنخواہوں میں اضافے کا اعلان نہیں کیا جائےگا۔

اِسی دوران پولیس نے بہتّر سے زیادہ ڈاکٹروں کو گرفتار کر کے مختلف تھانوں میں قید کردیا ہے۔

واقعہ کے بعد ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایش کے صدر صمد پانیزئی نے ایک ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نہ صرف دو سو ڈاکٹروں کی پولیس کے ہاتھوں گرفتاری کا دعویٰ کیا بلکہ زخمی ڈاکٹروں کی تعداد بھی بیس سے زیادہ بتائی۔

انہوں نے کہا کہ منگل سے تمام سرکاری ہسپتالوں میں ایمرجنسی سروسز کو بند کردیا گیا ہے اور احتجاج کا سلسلہ اس وقت تک جاری رہے گا جب تک صوبائی حکومت کی جانب سے ینگ ڈاکٹروں کی تنخواہوں میں اضافے کا اعلان نہیں کیا جائےگا۔

دوسری جانب پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن (پی ایم اے) بلوچستان نے بھی ینگ ڈاکٹروں کے احتجاج کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔

پی ایم اے کے صدر ڈاکٹرسلطان ترین کے مطابق، سرکاری ہسپتالوں کے سامنے کیمپس لگائے جارہے ہیں جس میں تمام بڑے ڈاکٹرز مریضوں کو علاج کی تمام سہولتیں مفت فراہم کریں گے۔

Related Articles

Leave a Reply